Breast Cancer Aspirin Clinical Trial.

اسپرین کو سو سال سے زائد پرانی جادوئی دوا بھی کہا جاتا ہے۔ یہ سر درد یا چھوٹی موٹی تکلیف کو کم کرنے کے لئے گھروں میں سب سے زیادہ استعمال ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں اسپرین کو ادھیڑ عمر کے افراد دل کی حفاظت کے لیے تجویز کرتے ہیں۔

امریکی نیشنل کینسر انسٹیٹیوٹ کے ڈاکٹر ہولی لومنس کی ایک ریسرچ رپورٹ کے مطابق اسپرین کھانے والے افراد بہت سی مختلف قسم کی بیماریوں سے بچ جاتے ہیں۔ وہ بیماریاں جو اموات کا باعث بنتی ہے۔ اسپرین کھانے والے افراد چھاتی اور مثانے کے کینسر سے بچانے میں بھی مددگار ثابت ہوتی ہے۔

 ڈاکٹر ہولی لومنس  کے مطابق معدے اور آنتوں کے کینسر سے بچاؤ کے لیے یہ دوا بہت مفید ہے۔ حال ہی میں ہونے والی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اسپرین کے استعمال سے چھاتی اور مثانے کے کینسر پر بھی اس کے بہتر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

ایک نئی تحقیق کے مطابق یہ بات سامنے آئی ہے کہ جو شخص ایک ہفتے میں تین مرتبہ اسپرین کا استعمال کرتا ہے۔ ان میں اموات اور کینسر میں مبتلا ہونے کا خطرہ 21 سے 25 فیصد تک کم دیکھا گیا۔ لیکن ماہرین کی جانب سے خبردار کیا گیا ہے کہ اندھا دھند اسپرین کا استعمال کرنے والے افراد اس کی وجہ سے بہت سے مختلف مرض کا بی شکار ہو سکتے ہیں۔ اسی لیے اسپرین کا استعمال متوازن مدار میں کیا جانا چاہیے۔

“مزید پڑھیں “کینسر کی بنیادی وجوہات کیا ہیں؟

Leave a Comment