فلو سے کیسے بچا جائے

How To Survive The Flu.

سردیاں ایک خشک موسم ہے. جیسے ہی سردیاں شروع ہوتی ہیں. موسم میں تبدیلی کے اثرات طبیعت پر پڑتے ہیں. جس کی وجہ سے ہر دوسرا شخص کھانستا، چھینکتا نظر آتا ہے. ہماری تھوڑی سی بداحتیاطی اور یہ  وائرل انفکشن تیزی سے پھیلتا ہے۔ آپ اس وائرل انفکشن کچھ اقدام کر کے خود کواور گھر والوں اس سے بچا سکتے ہیں. 

یخنی۔

سردیوں میں یخنی ایک بہترین غذا ہے. یخنی کا استعمال گلے کی خراش میں آرام پہنچاتا ہے اور ٹھنڈ کے اثر سے بچاتا ہے۔ یہ بچے اور بوڑھے دونوں بہت شوق سے کھاتے ہیں. مرغی کے ونگز میں کالی مرچ ، لونگ، دارچینی ، پیاز، لہسن ادرک ، سونف ، ثابت دھنیہ ، نمک ڈالکر پکائیں۔ 

گرم مشروب اور شہد۔

گلے کی تکلیف کے لیے گرم مشروب سب سے زیادہ بہتری ہے۔ یہ گلے کو آرام پہنچاتا ہے ۔ جبکہ شہد گلے میں خراش کو ختم کرتا ہے ۔ شہد جسم کی وائرل انفیکشن سے مقابلہ کرنے میں مدد کرتا ہے. آدھا کپ گرم پانی میں ایک ڈیڑھ چمچ شہد کھانسی میں فوری آرام پہنچاتا ہے۔ 

پھل اور سبزیاں۔

اگر آپ وائرل انفکشن سے بچنا چاہتے ہیں۔ تو آپ کو چاہیے کہ آپ پھل اور سبزیوں کو اپنی روزمرہ کی غذا میں شامل کریں. خاص طور پر وٹامن سی والی چیزیں پپیتہ، اسٹرابیری، بروکولی ، شملہ مرچ ، بندگوبھی وغیرہ ۔ اس کے علاوہ وٹامن سی کا سپلیمنٹ بھی لیا جاسکتا ہے۔. 

ہاتھ دھوئیں۔

 اگر آپ فلو سے بچنا چاہتے ہیں.تو اس سے بچنے کا سب سے آسان طریقہ ہاتھوں کو دھونا ہے. اس وائرل انفکشن سے بچنے کے لئے، کسی گاڑی سے اتر کر، کسی سے ہاتھ ملانے کے بعد ہاتھ ضرور دھوئیں۔ خاص طور پر اس موسم میں اس کا ضرور خیال رکھیں۔

پانی کا زیادہ استعمال۔

پانی قدرت کا ایک بہترین تحفہ ہے اور پانی کا زیادہ استعمال ہر موسم میں ضروری ہے. سردی کے موسم میں نہ پیاس لگتی ہے اور نہ ہی پسینہ آتا ہے. جس کی وجہ سے ہم گھنٹوں تک پانی پینا بھول جاتے ہیں. دن میں آٹھ گلاس پانی سے قوت مدافعت میں اضافہ ہوتا ہے۔ جس سے ہمارا جسم مختلف بیماریوں سے مقابلے کے لیے تیار ہوجاتا ہے۔ 

“مزید پڑھیں “بارش کے موسم میں محفوظ رہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.