کرونا وائرس کی نئی علامات

New Symptom Of Corona Virus.

اسپین کے طبّی ماہرین نے کرونا پر پٹیسٹ کرنے کے لیے انہوں نے کورونا وائرس کی ظاہری علامات جاننے کےلیے انہوں نے کووِڈ 19 میں مبتلا 666 مریضوں کا جائزہ لیا جن کی اوسط عمر تقریباً 58 سال تھی جبکہ ان میں 42 فیصد مرد اور 58 فیصد خواتین شامل تھیں۔ ان مریضوں کا تعلق لاطینی امریکا سے تھا. ان تمام افراد پر طبّی ریکارڈز سے یہ معلوم ہوا کہ ان مریضوں کے منہ میں کرونا وائرس کی وجہ سے کم از کم ایک علامات ضرور ظاہر ہوئی تھی. کورونا وائرس کی وجہ سے 11.5 فیصد مریضوں کی زبانوں پر آبلے پڑ گئے تھے جبکہ 6.6 فیصد کی زبان کے اگلے حصے میں سوجن آگئی تھی۔ 6.9 فیصد مریضوں کی زبانیں سوج گئی تھیں اور ان پر چھالے پڑ گئے تھے جن کی بناء پر ان افراد کو کھانے، پینے، چبانے اور بولنے تک میں شدید تکلیف اور دشواری کا سامنا ہورہا تھا۔ زبان کا ذائقہ متاثر ہونے اور سینے میں جلن کی عمومی شکایت 5.3 فیصد مریضوں نے کی۔ اس تحقیق کی روشنی میں ماہرین کا کہنا ہے کہ کووِڈ 19 کی علامات میں زبان پر آبلوں، چھالوں اور سوجن کو بھی شامل کرلیا جائے تاکہ اس وبائی مرض کی تشخیص کو مزید بہتر بنایا جاسکے۔

“مزید پڑھیں “کورونا ویکسین کے وہ منفی اثرات جن کو نظرانداز نہیں کرنا چاہئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.