جلد کی حفاظت

“حسن وسکہ ہے جو دلوں پر چلتا ہے” حسن کی اہمیت کسی دور میں کم نہیں ہوئی بلکہ اس کی اہمیت میں روزافزوں ضافہ ہی ہوا ہے۔ عصر حاضر میں تو فیشن کا شعور ہر خاتون کو ہے،جھبی تو ماڈلز اورفیشن سے وابستہ خواتین سے لے کرگھریلو خواتین تک سبھی اپنی جلد اور رنگت کے بارے میں بہت محتاط رہتی ہیں۔ نت نئی کریمیں اور ٹوٹکوں کا استعمال عام ہے لیکن یہاں یہ دیکھنا ضروری ہے کہ بازاری کریموں اور ماسک میں بہت زیادہ کیمیکلز شامل ہوتے ہیں، اس لئے گھر میں موجود قدرتی اشیاء سے ماسک تیار کئے جا سکتے ہیں جو ہر طرح کے مضر اثرات سے پاک ہوں گے۔ چند ایک ماسک درج ذیل ہیں۔ 

 (1) چھائیوں کے لیے:

آدھا چمچہ لیموں کا رس، آدھا ہلدی اور دو چمچے شہد ملا کر ماسک بنا لیں اور ہفتے میں دو تین بار استعمال کریں۔ 

(2) دانوں کے نشانات کے لئے:

روغن زیتون اور روغن کدو ہم وزن ملا کر چہرے پر ان جگہوں پر لگائیں جہاں دانوں کے نشانات رہ گئے ہوں، اس مساج کا استعمال اس وقت تک کریں جب تک نشانات مکمل طور پر ختم نہ ہو جائیں۔ 

(3) گندمی رنگت میں نکھار پیدا کرنے کے لئے:

دودھ اور اصلی شہد ہم وزن باہم ملا لیں اور   روزانہ دس سے پندرہ منٹ کے لیے اس کا ماسک لگائیں۔ 

(4) خوش جلد کو جھریوں سے بچانے کے لیے:

بادام کا تیل، اورعرق گلاب اور کسٹرآئل ہم وزن ملا کر رکھ لیں اور ہفتے میں ایک بار اس کا ماسک لگائیں۔ 

(5) کلونجی دھنیا اور چنبیلی کے عرقیات کو برابر مقدار میں ملا کر رکھ لیں۔ روزانہ دس سے پندرہ منٹ ان کا چہرے پر مساج کریں اور پھر نیم گرم پانی سے منہ دھو لیں۔ اس سے نہ صرف چہرے کی کلینزنگ ہو جائے گی بلکہ تمام مسام کھل جائیں گے اور دوران خون بھی تیز ہو گا۔ 

Leave a Reply

Your email address will not be published.