کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا انکشاف ہوا ہے۔

Spreading Of Corona Virus Has Been Revealed.

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے چین میں تحقیقات کے دوران یہ دریافت کیا ہے کہ نیا کورونا وائرس انسانوں میں کس جانور کے ذریعے منتقل ہوا. بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق چین میں کورونا وائرس کے بارے میں تحقیقات کرنے والی ڈبلیو ایچ او ٹیم کے عہدیدار پیٹر بین ایماریک نے ووہان میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ بات غلط ہے کہ یہ وائرس لیبارٹری سے لیک ہوکر پھیلا ہے. اس رپورٹ میں ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ وائرس ایک ایسے فرد سے پھیلنا شروع ہوا. جو اس وائرس سے پہلے ہی متاثر ہوا تھا اور پھر وائلڈ لائف مارکیٹ میں دیگر افراد میں اسے پھیلا دیا.  

اسے پورٹ میں بتایا گیا کہ ہمارے خیال میں سب سے زیادہ امکان منجمد جانوروں کا ہے کیونکہ انڈین گھروں کی کچھ اقسام میں اس طرح کا وائرس موجود ہے. پیٹر بین ایماریک نے کہا ‘ ہم نے 2019 کے دوران اس وبا کی تفصیلی تحقیق کی، مگر ہم دسمبر 2019 سے قبل کسی بڑی وبا کے شواہد ووہان یا کسی اور جگہ تلاش نہیں کرسکے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس تحقیقاتی ٹیم میں 17 بین الاقوامی اور 17 چینی ماہرین شامل ہیں۔ جو اس بات کو تلاش کر رہے ہیں کہ یہ وائرس کس طرح ووہان میں تیزی سے پھیل اور پھر اس دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

اس تحقیقاتی مشن میں 3 گروپس میں کام ہو رہا ہے، جو بیماری کے پھیلاؤ، وبا، ان کو پھیلانے والے جانوروں اور ماحول اور وائرس کے مالیکیولر ارتقا پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں۔

“مزید پڑھیں “کیوں جاپان میں کوویڈ ویکسین کے لاکھوں خوراک ضائع کر دی گئی؟

Leave a Reply

Your email address will not be published.