A New Treatment For Corona Has Been Introduced.

کووڈ 19 کی وجہ سے دنیا بھر میں سینکڑوں افراد ہلاک اور لاکھوں افراد کووڈ 19 سے متاثرہو چکے ہیں۔ لیکن ابھی تک ایسی کوئی خاص دوا سامنے نہیں آئی ، جو اس بیماری کا علاج کرنے میں مددگار ثابت ہو۔

بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق جرمنی میں کورونا وائرس کا علاج کرنے کے لئے اینٹی باڈیز کرنے کا حتمی فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق یورپی ملک جرمنی پہلا ملک ہو گا جو اینٹی باڈیزکے ذریعے کرونا سے متاثر افراد کا علاج کرے گا۔

جرمنی کے وزیر صحت جینز سپاہن کا اس رپورٹ کے مطابق کہنا تھا کہ جرمنی کی حکومت نے چارہزار 86 ملین ڈالرز کے عوض دو لاکھ خوراکیں بھی خرید لی ہیں۔ یہ خوراک تمام مریضوں ک مفت فراہم کی جائیں گی۔ 

جرمنی کے وزیر صحت کہنا تھا کہ جرمنی نے ایک امریکی دوا ساز کمپنی ریجنی رون اور ایلی للی سے اینٹی باڈی حاصل کی ہیں۔ یہ امریکی دوا ساز کمپنیاں دو قسم کی اینٹی باڈیز کو ملا کر کاک ٹیل تیار کرتی ہے۔

ان کمپنیوں کی ایک رپورٹ کے مطابق ان اینٹی باڈیز میں انفیکشن سے لڑنے والے پروٹین موجود ہوتے ہیں جو کورونا وائرس کو انسانی خلیوں میں داخل ہونے سے روکتے ہیں۔

جرمنی کے وزیر صحت کا کہنا ہے کہ آئندہ ہفتے دو مختلف اقسام کی اینٹی باڈیز اسپتالوں میں مہیا کردی جائیں گی۔ جو کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کو لگائی جائے گی۔

واضح رہےکہ سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ جب گزشتہ سال کورونا وائرس کا نشانہ بنے تھے تو میڈیا رپورٹس کے مطابق ان کا علاج اینٹی باڈیز کاک ٹیل سے ہی کیا گیا تھا۔

“مزید پڑھیں “کورونا وائرس سے زیادہ خطرناک وائرس دریافت۔

Leave a Comment